تجارتکینیڈا

جمعہ سے جرمانہ 5000 ڈالر، ہوٹل قرنطینہ لازم قرار: فیڈرل حکومت

حکومتی مشاورتی پینل نے کہا تھا کہ ہوٹل قرنطینہ کئی وجوہات کی بنا پر ناقص ہے،

وفاقی حکومت نے اعلان کیا ہے کہ جمعہ سے شروع ہونے والے بین الاقوامی فضائی مسافر جو اپنے مطلوبہ کوویڈ-19 ٹیسٹ کروانے سے انکار کرتے ہیں یا جو قرنطینہ ہوٹل میں چیک کرنے سے انکار کرتے ہیں انہیں اس جرم میں 5000 ڈالر جرمانہ عائد کیا جاسکتا ہے جو موجودہ جرمانے3000 سے 2000 ڈالر زیادہ ہے۔

مزید یہ کہ مسافروں کو کینیڈا داخلے کے لئے منفی کوویڈ-19 ٹیسٹ کا ثبوت بھی فراہم کرنا ہوگا۔

یاد رہے کہ فروری سے حکومت نے کینیڈا آنے والے مسافروں کو آمد پر کوویڈ-19 ٹیسٹ لازم قرار دے دیا ہے جس میں اپنے ٹیسٹ کے نتائج تک حکومت سے منظور شدہ ہوٹل میں قیام بھی شامل ہے۔ اس ضمن میں مسافروں کو اپنے قیام کے لئے بل کی ادائیگی بھی خود ہی کرنا ہوگی جو 2000 ڈالر تک ہوسکتا ہے۔

دلچسپ امرفیڈرل حکومت کے اعلان کے ٹائمنگ کی ہے۔ یاد رہے کہ یہ جرمانہ گزشتہ ہفتے جاری ہونے والی حکومتی مشاورتی پینل کی رپورٹ کے بعد کیا گیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ اوٹاوا کو ہوٹل کی قرنطینہ کی ضرورت ختم کرنی چاہئے اور اس کی بجائے لوگوں کو اپنی قرنطینہ کا انتظام کرنے دینا چاہئے۔

حکومتی مشاورتی پینل نے کہا تھا کہ ہوٹل قرنطینہ کئی وجوہات کی بنا پر ناقص ہے، جس میں یہ بھی شامل ہے کہ کچھ مسافر قوانین کو نظر انداز کرنے اور موجودہ جرمانہ 3000 ڈالر تک ادا کرنے کا انتخاب کر رہے ہیں۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button