کینیڈا

کینیڈا یوکرائن کو ہتھیاروں کی بجا ئے سائبر سپورٹ فراہم کرے گا

کینیڈا کی حکومت روسی دراندازی کے خطرے سے باز رکھنے اور ممکنہ طور پر دفاع کرنے کی تیاریوں کی حمایت میں یوکرائن کو چھوٹے ہتھیار نہیں بھیجے گی۔

تاہم حکومت آپریشن یونیفر کو مزید تین سال کے لیے توسیع دے رہی ہے اور روسی سائبر حملوں سے نمٹنے کے لیے انٹیلی جنس شیئرنگ اور معاونت دونوں کو فروغ دے رہی ہے اور ساتھ ہی "غیر مہلک سازوسامان” بھی بھیج رہی ہے۔

وزیر اعظم جسٹن ٹروڈو نے یہ اعلان بدھ کی دوپہر کے آخر میں ایک پریس کانفرنس میں تین روزہ ورچوئل کابینہ اجلاس کے بعد کیا جہاں اسلحہ بھیجنے کی تجویز پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

خاص طور پر، پستول، سنائپر رائفل اور مشین گن جیسے آتشیں اسلحہ، ممکنہ طور پر زیادہ انٹیلی جنس شیئرنگ اور سائبر سپورٹ کے ساتھ۔ یوکرائنی حکومت نے آپریشن یونیفر میں توسیع کے ساتھ ساتھ کینیڈا سے ہتھیار وں کا مطالبہ کیا تھا۔

یوکرائن کے قومی سلامتی کے ایک عہدیدار نے دن کے اوائل میں اس بات کا اعادہ کیا کہ ملک کو کینیڈا کی دفاعی امداد کی ضرورت ہے کہ وہ اسے فوری طور پر "دفاعی ہتھیار” بھیجے۔

ٹروڈو نے کہا کہ کینیڈا اپنے فوجی تربیتی مشن کے حصے کے طور پر پہلے سے زمین پر موجود تقریبا 200 دیگر افراد میں شامل ہونے کے لئے کینیڈا فورسز کے 60 اضافی ارکان تعینات کر رہا ہے اور وہ مستقبل میں مزید 200 افراد کی تعیناتی کے امکانات کا اختیار دے رہے ہیں۔

ٹروڈو سے جب یہ وضاحت کرنے کو کہا گیا کہ کینیڈا کون سی غیر مہلک امداد فراہم کرنے کا ارادہ رکھتا ہے اور ہتھیار نہ بھیجنے کا فیصلہ کیوں کیا گیا تو ٹروڈو نے کہا کہ جسمانی بکتر، بصریات اور اسکوپس جیسی چیزیں، اس طرح کے عناصر وغیرہ کی فراہمی پر غور ہورہا ہے۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button
adana eskort - eskort adana - mersin eskort - eskort mersin - eskort - adana eskort bayan - eskort bayan adana - mersin eskort bayan