کینیڈا

جی 20 مذاکرات کی تفصیلات شیئر کرنے پر چینی صدر شی جن پنگ کا ٹروڈو سے مقابلہ

چین کے صدر شی جن پنگ نے کینیڈا کے وزیر اعظم جسٹن ٹروڈو کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا ہے کہ انہوں نے منگل کے روز انڈونیشیا کے شہر بالی میں جی 20 سربراہ اجلاس کے موقع پر دونوں رہنماؤں کے درمیان ہونے والی بات چیت کی تفصیلات میڈیا کے ساتھ شیئر کیں۔

بدھ کے روز جی 20 کے اختتامی اجلاس میں شی جن پنگ نے ایک مترجم کے ذریعے ٹروڈو سے کہا، "ہم جو کچھ بھی بات کر رہے ہیں وہ اخبار میں لیک ہو چکی ہے، یہ مناسب نہیں ہے۔

ٹروڈو نے شی جن پنگ کے مترجم کو ٹوکتے ہوئے کہا: ‘ہم آزادانہ اور کھلے اور کھلے مکالمے پر یقین رکھتے ہیں اور یہی ہم جاری رکھیں گے۔ ہم مل کر تعمیری طور پر کام کرنا جاری رکھیں گے لیکن کچھ چیزیں ایسی ہوں گی جن پر ہم اختلاف کریں گے۔

ٹروڈو کے جواب کے بعد دونوں نے مصافحہ کیا اور الگ الگ راستے پر چلے گئے۔

منگل کے روز ایک سینئر سرکاری ذریعے نے گلوبل نیوز کو بتایا کہ ٹروڈو نے یوکرین، شمالی کوریا میں جنگ اور کینیڈا کے انتخابات میں مبینہ چینی مداخلت کو شی جن پنگ کے ساتھ اٹھایا جب انہوں نے تقریبا دس منٹ تک بات کی۔

وزیر خارجہ میلانیا جولی نے بھی اس بات کی تصدیق کی ہے کہ انہوں نے گزشتہ روز اپنے چینی ہم منصب کے ساتھ صحافیوں کے ساتھ اسی موضوع پر تبادلہ خیال کیا تھا۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button