کینیڈا

لبرلز کا ہسپتالوں کے سامنے احتجاج اور کارکنوں کو دھمکیاں دینے کے خلاف قانون سازی کا وعدہ

دوبارہ منتخب ہونے والی لبرل حکومت ان عمارتوں تک رسائی کو روکنا ایک فوجداری جرم قرار دے گی جو ہیلتھ کئیر کی خدمات فراہم کرتی ہیں اور ساتھ ہی وہاں کام کرنے والوں کو دھمکیاں دینے کو بھی جرم قرار دے گی۔

پیر کو وینکوور میں خطاب کرتے ہوئے لبرل رہنما جسٹن ٹروڈو نے کہا کہ یہ "ٹھیک نہیں” ہے کہ ملک بھر کے اسپتالوں کو حفاظتی ٹیکوں کے خلاف مظاہروں سے بچانے کے لئے رکاوٹیں لگانی پڑ رہی ہیں۔

ٹروڈو نے کہا کہ یہ جاننے کے لئے کہ ایک نرس لیٹ شفٹ میں جا رہی ہے، پارکنگ لاٹ عبور کر رہی ہے، ڈر سکتی ہے کہ وہاں کوئی ایسا شخص ہو گا جو اس پر تھوک دے یا اس پر بے حیائی کا نعرہ لگا سکے- یہ ٹھیک نہیں ہے۔

یہ واقعی بدقسمتی کی بات ہے کہ ہمیں ابھی اس مقام تک پہنچنا ہے جہاں ہمیں یہ بتانا ہے کہ ایسا گٹھیا احتجاج نہیں کیا جانا چاہئے۔

کوویڈ-19 کے پھیلاؤ کو روکنے کے لئے صحت عامہ کے اقدامات کے ساتھ جڑے مسا ئل کو اجاگر کرنے کے لئے کینیڈا بھر کے اسپتالوں میں پیر کے روز متعدد مظاہرے ہوئے تھے۔

لبرلز اس بات کو یقینی بنانے کے لئے قانون سازی بھی پیش کریں گے کہ وہ کاروبار اور تنظیمیں جو ملازمین یا صارفین سے حفاظتی ٹیکوں کے ثبوت کی ضرورت کا فیصلہ کرتی ہیں "بغیر کسی خوف یا قانونی چیلنج کے ایسا کر سکتی ہیں”۔

کنزرویٹو رہنما ایرن اوٹول نے پیر کے روز اسپتالوں کے باہر کسی بھی قسم کی ہراسانی کی مذمت کی۔

انہوں نے کہا کہ ہماری فرنٹ لائن نرسوں، ڈاکٹروں کو ہراساں کرنا مکمل طور پر ناقابل قبول ہے۔ ہم سب پر اپنے فرنٹ لائن ڈاکٹرز، نرسز، اپنے اسپتالوں کے لوگوں کا بہت بڑا قرض ہے۔ انہوں نے کہا کہ میں ان کی تعریف کرتا ہوں اور ان کا احترام کرتا ہوں۔

پارٹی کے پلیٹ فارم میں کہا گیا ہے کہ کنزرویٹو حکومت مظاہرین کو اہم بنیادی عمارتوں کو بلاک کرنے سے روکنے کے لئے "کریٹیکل انفراسٹرکچر پروٹیکشن قانون” منظور کرے گی۔ اس میں گزشتہ سال کی ویٹ سویٹن ریل ناکہ بندی کا مخصوص حوالہ دیا گیا ہے۔

دستاویز میں لکھا گیا ہے کہ کینیڈا میں پرامن احتجاج بنیادی حق ہے لیکن قانون کی حکمرانی کے احترام کا مطلب یہ ہے کہ غیر قانونی ناکہ بندی جو اہم بنیادی عمارتوں کو بند کرتی ہے، اہم سامان تک رسائی کو خطرے میں ڈالتی ہے یا زندگیوں کو خطرے میں ڈالتی ہے اسے برداشت نہیں کیا جا سکتا۔

اوٹول نے کہا کہ انہیں مقامی قانون نافذ کرنے والے اداروں پر "بہت اعتماد” ہے تاکہ یہ یقینی بنایا جاسکے کہ لوگ خدمات تک رسائی حاصل کر سکیں۔

این ڈی پی کے رہنما جگمیت سنگھ نے کہا کہ ہیلتھ کئیر کارکنوں یا مریضوں کو خطرے میں ڈالنے والے مظاہروں کے لئے "بالکل بھی جگہ نہیں ہے”۔

انہوں نے کہا کہ یہ غلط ہے، یہ احتجاج کی جگہ نہیں ہے۔ ہم اس مقصد کے حصول کے لئے وفاقی سطح پر جو کچھ کر رہے ہیں وہ یہ ہے کہ اگر کوئی کسی بھی طرح صحت کی دیکھ بھال کرنے والے کارکن کو دھمکیاں دے رہا ہو، مریضوں کو دھمکیاں دے رہا ہو، ان کی دیکھ بھال تک رسائی کی صلاحیت میں رکاوٹ پیدا کر رہا ہو تو ہم اسے سنگین سزا کا ایک عنصر بنا دیں گے۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button