کمیونٹی نیوزکینیڈا

اسرائیل فلسطین تنازعہ ختم کرنے کے لئے مزید آبادکاریاں بند کرے: کینیڈین وزیرخارجہ

گارنیو نے آج مغربی کنارے آمد کے ساتھ اپنا دورہ ختم کیا جہاں انہوں نے فلسطینی اتھارٹی کے سینئر اراکین سے ملاقات کی۔

وزیر خارجہ مارک گارنیو کا کہنا ہے کہ انہوں نے اپنے اسرائیلی ہم منصبوں سے کہا کہ مشرقی یروشلم میں بے دخلی، انہدام اور بستیوں کی تعمیر بند ہونی چاہئیے تاکہ کشیدگی کو کم کیا جاۓ اور خطے میں تشدد کو روکا جاۓ۔

مشرق وسطیٰ کے پانچ روزہ دورے کے اختتام پر صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے گارنیو کا کہنا ہے کہ کینیڈا طویل عرصے سے جاری اسرائیل اور فلسطینی تنازعہ کے خاتمے کے لیے دو ریاستی حل کی حمایت کرتا ہے۔

لیکن ان کا کہنا ہے کہ مئی میں اسرائیل اور فلسطینی عسکریت پسند گروپ حماس کے درمیان جنگ کا تازہ ترین دور ختم ہونے کے بعد مزید کئی نازک اور اہم قلیل مدتی مسائل موجود ہیں۔

گارنیو کا کہنا ہے کہ گیارہ روزہ جنگ کے بعد غزہ کی پٹی میں انسانی امداد کا حصول ایک ترجیح ہے جس میں حماس کے زیر انتظام انکلیو میں 230 افراد ہلاک اور متعدد مکانات اور دیگر بنیادی ڈھانچے تباہ ہوئے تھے۔

اس لڑائی میں بارہ اسرائیلی بھی ہلاک ہوئے تھے جو مشرقی یروشلم میں فلسطینی اکثریت والے محلے سے متعدد خاندانوں کو بے دخل کرنے کے اسرائیلی منصوبوں پر جھڑپوں کے نتیجے میں پیدا ہوئے تھے۔

گارنیو نے اسرائیل جانے سے قبل گزشتہ ہفتے اردن میں مشرق وسطیٰ کے دورے کا آغاز کیا تھا جہاں انہوں نے ملک کے نئے وزیر اعظم نفتالی بینیٹ سے ملاقات کی تھی۔

گارنیو نے آج مغربی کنارے آمد کے ساتھ اپنا دورہ ختم کیا جہاں انہوں نے فلسطینی اتھارٹی کے سینئر اراکین سے ملاقات کی۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button