کینیڈا

صاف ایندھن کے نئے ضوابط سے 2030 تک کینیڈین خاندانوں کو 300 ڈالر تک کا نقصان ہوگا: تجزیہ

گیسولین اور ڈیزل سے گرین ہاؤس گیسوں کے اخراج کو کم کرنے کے نئے وفاقی ضوابط سے کینیڈین کو 2030 تک پمپ پر 13 سینٹ فی لیٹر تک زیادہ لاگت آئے گی۔

بدھ کو شائع ہونے والے کلین فیول ریگولیشنز کے اثرات کے تجزیے میں اندازہ لگایا گیا ہے کہ وہ 2030 میں گرین ہاؤس گیسوں کے اخراج میں تقریبا 18 ملین ٹن یعنی اس سال کے لئے اپنے موجودہ اہداف کو پورا کرنے کے لئے کینیڈا کو ختم کرنے کی ضرورت کا پانچ سے چھ فیصد کم کر دیں گے۔

ریفائنریوں اور دیگر ایندھن سپلائرز کی تعمیل پر 22.6 ارب ڈالر سے 46.6 ارب ڈالر تک لاگت آئے گی یا اوسطا تقریبا 151 ڈالر فی ٹن اخراج میں کمی آئے گی۔

اس کے اثرات سے کینیڈا کی جی ڈی پی سے 9 ارب ڈالر کی چھوٹ ہو جائے گی اور 2030 میں جب ضوابط کی مکمل گنجائش نافذ ہو جائے گی تو گیسولین کی قیمتوں میں چھ سے 13 سینٹ فی لیٹر کے درمیان اضافہ ہو جائے گا۔

اس کی قیمت 76 ڈالر سے 174 ڈالر فی گاڑی یا 301 ڈالر فی گھر تک ہوسکتی ہے۔

تجزیے میں کہا گیا ہے کہ کم آمدنی والے خاندانوں، اکیلی ماؤں اور بزرگوں پر غیر متناسب لاگت کے اثرات مرتب ہوں گے جو توانائی کی لاگت میں اتار چڑھاؤ کا زیادہ شکار ہیں اور الیکٹرک گاڑیوں جیسے متبادل وں کے متحمل ہونے کے امکانات کم سے کم ہیں۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button
adana eskort - eskort adana - mersin eskort - eskort mersin - eskort - adana eskort bayan - eskort bayan adana - mersin eskort bayan